ماڈل ٹاؤن پولیس اے وی ایل ایس کا جاتی امراء کی رہائشی معمر خاتون کے گھر پر دھاوا،کاریں،سونا اور ڈالر لے گئی

تفصیلات کے مطابق رائیونڈ میں واقع جاتی امراء کی رہائشی خاتون کے گھر پر اے وی ایل ایس پولیس ماڈل ٹاؤن نے بغیر وارنٹ کے کارروائی کی ۔گھر سے دو کاریں، اٹھارہ تولے سونا ،سترہ ہزار ڈالر،تین عدد قیمتی گھڑیاں ،سینمیٹک کیمرا اور گھر میں لگے ڈی وی آر بھی لے گئی۔ لاہور پریس کلب میں فلم پروڈیوسر ڈاکٹر رفعت المنتہا نے اپنی والدہ فیروزہ بیگم ،سینئر اداکار راشد محمود اور صدر اکیڈمی آف فیملی فزیشن ڈاکٹر طارق میاں کے ہمراہ لاہور پریس کلب کی ۔ڈاکٹر رفعت نے کہا کہ پاکستانی شہری ہوں

ایک وکیل ،اوورسیز پاکستانی ہوں اور امریکا میں رہتی ہوں۔
پولیس نے میرے گھر پر دھاوا بولا ۔میری والدہ گھر پر اکیلی تھی۔ انہیں زدوکوب کیا۔اس دوران پولیس نے گھر کا سامان لوٹا۔ میری والدہ ابھی تک شاک میں ہیں۔

میں کہتی ہوں کہ اگر کوئی غیر قانونی کام ہوا ہے تو اس کو قانونی طریقے سے دیکھا جائے ناکہ قانون کو اپنے ہاتھ میں لے کر کسی بھی شہری کے ساتھ زیادتی کی جائے۔میں پوچھنا چاہتی ہوں کہ پاکستان میں قانون نام کی کوئی چیز ہے ۔پاکستان میں فلم بنائی ۔اپنا سرمایہ لگایا ۔ ہمارے ساتھ ناروا سلوک کیا گیا۔

اے وی ایل ایس پولیس کا ذیلی ادارہ ہے یہ اپنے اختیارات کا ناجائز استعمال کررہا ہے۔اس ادارے نے کرپشن کا بازار گرم کیا ہوا ہے۔اس کو لگام ڈالی جائے تاکہ شہری اس کے عذاب سے محفوظ رہ سکیں،یہ ذیلی ادارہ پولیس کی چھتری کے نیچے اپنے ناجائز اختیارات استعمال کرتاہے۔

ڈاکٹر رفعت نے الزام لگایا کہ مبینہ طور پر اس سارے عمل کے پیچھے پولیس افسر رانا تنویر کا ہاتھ ہے۔ وہ مجھے سنگین نتائج کی دھمکیاں دے رہا ہے۔چیف جسٹس آف پاکستان،وزیر اعظم ،وزیر اعلیٰ پنجاب ،آئی جی پنجاب اس واقعے کا نوٹس لیں اور ذمہ داروں کو قرار واقعی سزادی جائے۔یہ پاکستان میں کیا ہورہا ہے۔

سینئر اداکار راشد محمود نے کہا کہ وہ اس واقعے کی پرزور مذمت کرتے ہیں۔ ان کا بھی اعلیٰ حکام سے مطالبہ ہے کہ اس خاندان کے ساتھ ہونے والی زیادتی کا ازالہ کیا جائے۔چادر اور چار دیواری کا تقدس پامال کیا گیا ہے۔پنجاب پولیس ایک بہترین فورس ہے۔ایسے غیر ذمہ دارافسروں کے خلاف کارروائی عمل میں لائی جائے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Scroll to Top